مجھ کو لوٹا دے جوانی کا سہانا موسم

جیسے چاہا تھا کہاں ویسے گزارا موسم
مجھ کو لوٹا دے جوانی کا سہانا موسم

میرے بچپن کے کھلونے مرے ساتھی دے دے
میرے مولا مجھے لوٹا دے پرانا موسم

جس میں آتے ہیں نظر خواب ہمیں پریوں کے
دے دے نانی کی کہانی سا وہ پیارا موسم

پھول سے تتلی سے ہوتی ہے محبت جس میں
کتنی جلدی وہ گزر جاتا ہے سارا موسم

جس کی فطرت میں تغیر ہے بہت تیری طرح
مجھ کو وہ شخص سمجھ میں نہیں آتا موسم

میں نے سمجھایا تھا مت لکھ وہ کہانی جس میں
ایک حسرت میں گزر جاتا ہے پورا موسم

زینؔ یہ لوگ جو ہوتے ہیں محبت والے
ان کو ملتا ہے محبت کا ادھورا موسم

(جیسے چاہا تھا کہاں ویسے گزارا موسم)
(مجھ کو لوٹا دے جوانی کا سہانا موسم)

سید انوار زینؔ


آ گیا آمدِ سرکار کا پیارا موسم

بندوں کے لیے بھیج دے برسات کا موسم

عشق والفت کاپیار کاموسم

Share this on

متعلقہ اشاعت

بحر موجی كا تعارف

بحر موجی كا تعارف نام: دیا شنکر تخلص: بحر موجی تاریخ ولادت: 9 ستمبر 1911 جائےولادت: داؤد گنج، ضلع ایٹہ، اتر پردیش، بھارت تعلیم: جھانسی

مزید پڑھیں

امن لکھنوی كا تعارف

امن لکھنوی كا تعارف نام: گوپی ناتھ سریواستوا تخلص: امن لکھنوی تاریخ ولادت: 16 ستمبر یا 21 اکتوبر 1898 جائےولادت: لکھنؤ، اترپردیش، بھارت تعلیم: امن

مزید پڑھیں

شاکر بریلوی كا تعارف

شاکر بریلوی كا تعارف نام: کالکا پرشاد مہروترا تخلص: شاکر بریلوی سن ولادت: 1892 جائےولادت: بریلی، اترپردیش، بھارت شاکر بریلوی کے والد منگل سین مہروترا

مزید پڑھیں

شمیم کرہلوی كا تعارف

شمیم کرہلوی كا تعارف نام: دیا شنکر سکسینہ تخلص: شمیم کرہلوی سن ولادت: 1895 جائےولادت: قصبہ دھرمنگدر پور، اترپردیش، بھارت جناب شمیم کرہلوی نے الہ آباد

مزید پڑھیں

This Post Has One Comment

جواب دیں