وفاخلوص و محبت کی کاٸنات وطن

وفاخلوص و محبت کی کاٸنات وطن
ہے تو ہی مرکزِ عینین ِ التفات وطن

ہرایک صبح تری روشن و درخشندہ
تجلیات کا مصدر ہے تیری رات وطن

پس ِ ممات بھی تجھ سےرہیں گےہم منسوب
کبھی نہ ٹوٹیں گے تجھ سے تعلقات وطن

جمالیات کا گلزار تجھ میں ہےآباد
ہے تیری خاک پہ قربان میری ذات وطن

تری زمیں سے فروغ ِفلاح وحکمت ہے
تری ولا ہے ظفر مندی ِ حیات وطن

ترے خلاف جو بھونکےگا،منھ کی کھاےگا
مقدر اس کا بنےگا شکست ومات وطن

ترے جلو میں بہے نہر امن وخیر ونشاط
کبھی بھی آے نہ سیلاب مشکلات وطن

لگے گا نعرہ ٕ ہندوستان زندہ باد
رہےگی برلب واصف تری ہی بات وطن

(وفاخلوص و محبت کی کاٸنات وطن)
(ہے تو ہی مرکزِ عینین ِ التفات وطن)

از
واصف رضاواصف مدھوبنی بہار


رب کاتحفہ ہےشانداروطن

بالیقیں میری آنکھوں کا تارا وطن

گوشۂ دل میں ہے آرزوئے وطن

Share this on

متعلقہ اشاعت

This Post Has One Comment

جواب دیں